نیویارک ایک اور 9 11 ہونے سے بچ گیا.پاکستانی شامل

دنیا
13
0

نیویارک کے پراسیکیوٹر نےظاہر کیا ہے 2016 میں ایک اور 9 11 ہونے سے نیویارک کو بچا لیا گیا ہے جسمیں تین لوگوں نے نیویارک میں فائیرنگ اور بم نصب کرنے کا ارادہ کر رکھا تھا .
ان کے منصوبوں میں نیویارک کے ٹائم سیکوئیر اور زیرزمین ریلوے میں بم نصب کرنا اور موسیقی میلوں میں فائیرنگ شامل تھی. ایک خفیہ ایجنٹ نے ان کےمنصوبوں کو ناکام بناتے ہونے ان کو گرفتار کیا اور ان کو پولیس کے خوالے کیا تا کہ وہ اپنی تحقیقات مکمل کر سکیں .اور اس سارے معاملے کو خفیہ رکھا گیا ہے تاکہ ساری تحقیقاتی کاروائی مکمل کی جا سکے .
پراسیکیوٹر کے مطابق طلحٰی ہارون اور عبدالرحمان البینسوے جو کہ 19 سالہ دو نوجوان ہیں اپنے ارادوں کا اظہار ایک خفیہ ایجنٹ کو سوشل میڈیا پر کیا .اس خفیہ ایجنٹ نے اپنے آپ کو اسلامک ایسٹیٹ یعنی دائیش کا نمائیندہ ظاہر کیا ہوا تھا .
دستاویزات کے مطابق عبدالرحمان البینسوے نے نیویارک کے ٹائم سیکوئیر کی تصاویر اور زیر زمین ریلوے سسٹم کی تصاویر اس خفیہ ایجنٹ کے ساتھ شئیر کرتے ہوئے کہا کہ ھم کو ان جہگوں پر کار بم لگانے چائیں کیونکہ لوگوں کا رش کافی زیادہ رہتا ہے .

© Getty Times Square, New York City

ایک اور پیغام میں اس نے کہا کہ کیوں نا ھم اپنے ہاتھوں میں بندوقوں سے ایک میوزک کنسرٹ میں داخل ہوں اور لوگوں کو ایک اور 9 11 کی یاد تازہ کروائیں.
دستاویزات کے مطابق عبدالرحمان البینسوے نے بم بنانے کےلیے تمام مواد بھی خرید لیا تھا اور اسکو اس خفیہ ایجنٹ‌ کو بھی بیجھ دیا تھا . دوسری جانب ہارون نے ایک بم بنانے والے سے معلومات لیں اور پاکستان سے امریکہ آنے کا ارادہ بھی کر لیا تا کہ وہ عبدالرحمان البینسوے کی مدد کر سکے .
19 سالہ اس لڑکے نے خفیہ ایجنٹ‌ کو بتایا کہ ھم زیرزمین ریلوے میں بندوقوں سے لیس وار کریں گے اور جب گولیاں ختم ہو جائیں گی ھم اپنی خودکش جیکٹ کو اڑا لیں گے .
رسل سالک جو کہ 37 سالہ فلپینی ہے نے اس سارے واقعے کےلیے ھارون اور عبدالرحمان البینسوے کو اس مقصد کے لیے رقوم دینے کا وعدہ کیا تھا.
عبدالرحمان البینسوے جو کہ کینڈین رہائشی تھا کو نیوجرسی سے گرفتا کر کے 2016 میں چارج کیا گیا تھا اور جلد ہی اس کو عمر قید کی سزا سنا دی جائے گی .
ہارون‌ کو پاکستان میں سمتبر میں پاکستان میں گرفتار کیا گیا تھا اور سالک کو فلپین سے . دونوں کو امریکہ لے جایا جائے گا.

Facebook Comments